vc 2

آزا دکشمیر کے اکلوتے سپوت نائیک سیف علی جنجوعہ شہید کو نظرانداز کر دیا

میرپور(ظفر مغل سے)وائس چانسلر مسٹ یونیورسٹی میرپور سمیت بیسیوں پروفیسر صاحبان اور متعدد ڈیپارٹمنٹس کے سربراہان اور پی آر او بھی قومی سطح پر نشان حیدر کا اعزاز حاصل کرنے والون سے بے خبر مسٹ انتظامیہ نے 11نشان حیدر کا اعزاز حاصل کرنے والوں میں سے صرف دس10 شہداء کی تصاویر مسٹ کے مرکزی کمپلیکس ی بیرونی دیوار پر لگا کر نشان حیدر اور”ہلال کشمیر“کے اعلیٰ ترین اعزاز حامل آزا دکشمیر کے اکلوتے سپوت نائیک سیف علی جنجوعہ شہید کو نظرانداز کر دیا سنجیدہ فکر حلقوں کی طرف سے مسٹ انتظامیہ کے اس اقدام پر اظہار تشویش۔واقعات کے مطابق یوم دفاع پاکستان کے موقع پر پاک فوج کے اعلیٰ ترین اعزاز ”نشان حیدر“ حاصل کرنے والے قوم کے نامور سپوتوں کے نام اور تصاویر پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل آصف غفور کی طرف سے گزشتہ کئی سالوں کی طرح امسال بھی 11نشان حیدر حاصل کرنے والوں کی تصاویر اور نام سرکاری طور پر جاری کیے گئے اور قومی اخبارات میں شائع ہونے والے ایڈیشنز میں بھی11نامور شہداء کے نام اور تصاویر شائع ہوئیں مگر میرپور یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوج کے وائس چانسلر راجہ حبیب الرحمن سمیت بیسیوں پروفیسر صاحبان اور متعدد ڈیپارٹمنٹس کے سربراہان اور پی آر او مسٹ راجہ مرتضیٰ کی بے خبری اور سستی اور لاپرواہی کا یہ عالم ہے کہ مسٹ کے مرکزی کمپلیکس علامہ اقبال روڈ میرپور کی مرکزی بیرونی دیوار پر دس نشان حیدر حاصل کرنے والوں کا اعزاز پانے والے شہداء کی تصاویر لگا کر آزاد کشمیر سے نشان حیدر اور ہلاک کشمیر کے اعلیٰ ترین اعزاز کے حامل اکلوتے نامور کشمیری سپوت نائیک سیف علی جنجوعہ شہید کی تصویر نہ لگا کر اپنی بے خبری،سستی اور لاپرواہی کا مظاہرہ کیا ہے جس پر سنجیدہ فکر حلقوں نے مسٹ انتظامیہ کے اس رویہ کی مذمت کرتے ہوئے ان کے اس اقدام پر تشویش کا اظہار کیا ہے اور یونیورسٹی انتظامیہ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اصلاح احوال کے لئے اقدامات اٹھائیں اور نوجوان نسل کو نائیک سیف علی جنجوعہ شہید نشان حیدر کے کارہائے نمایاں سے بھی آگاہ کریں یاد رہے کہ نائیک سیف علی جنجوعہ نے 26 اکتوبر 1948ء کو پاکستان کے ازلی دشمن بھارت کو بھاری نقصان پہنچا کر ضلع کوٹلی میں پیر کلیوا کی پہاڑی پر شجاعت وبہادری کی داستان رقم کرتے ہوئے جام شہادت نوش کیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں